Website URL:
   Homepage

Accessibility links

     * مواد پر جائیں
     * رسائی میں مدد

     * News
     * Sport
     * Weather
     * Radio
     * Arts
     * فہرست

   سرچ
   BBC Urdu

News Navigation

   Sections
     * صفحۂ اول
     * پاکستان
     * آس پاس
     * ورلڈورلڈ Selected
     * کھیل
     * فن فنکار
     * سائنس
     * ویڈیو
     * پنجابی ویڈیو
     * (BUTTON) مزید More sections

   ورلڈ
     * صفحۂ اول
     * پاکستان
     * آس پاس
     * ورلڈورلڈ Selected
     * کھیل
     * فن فنکار
     * سائنس
     * ویڈیو
     * پنجابی ویڈیو

   ورلڈ

Media player

   (BUTTON) Close player
   (BUTTON) Close player
   (BUTTON) Close player
   کورونا

کورونا وائرس کے دوران پابندیوں میں رہنے والی ’لاک ڈاؤن جینریشن‘ کئی دہائیوں تک متاثر رہ سکتی ہے

   (BUTTON) Play video اینٹی باڈی ٹیسٹ کیا ہوتا ہے اور یہ کیوں اہم ہے؟ from BBCVideo
   اینٹی باڈی ٹیسٹ کیا ہوتا ہے اور یہ کیوں اہم ہے؟BBC1:5221 مئ 202021 مئ 2020

   دنیا میں متاثرین: 5،618،829 | دنیا میں ہلاکتیں: 351،146 | پاکستان میں متاثرین: 59,151 | اسلام آباد: 1,879 | پنجاب: 21,118 | سندھ: 23,507 | خیبر پختونخوا: 8,259 | بلوچستان: 3,536 | گلگت بلتستان: 638 | پاکستان کے زیر انتظام کشمیر: 214 | ہلاکتیں: 1,225 | صحت یاب: 19,142

Related Video and Audio

   (BUTTON) (BUTTON)
   Video 1 minute 5 secondsVideo 1 minute 5 seconds1:05
   

Play video لاک ڈاؤن کے بعد زندگی کیسی ہو گی؟ from BBCلاک ڈاؤن کے بعد زندگی کیسی ہو گی؟

   
     * BBC

   (BUTTON) Play video لاک ڈاؤن کے بعد زندگی کیسی ہو گی؟ from BBC
   Video 59 secondsVideo 59 seconds0:59
   

Play video سماجی دوری اور دو میٹر کا فاصلہ from BBCسماجی دوری اور دو میٹر کا فاصلہ

   
     * BBC

   (BUTTON) Play video سماجی دوری اور دو میٹر کا فاصلہ from BBC
   Video 57 secondsVideo 57 seconds0:57
   

Play video وائرس سے بچنے کے لیے ایسے ہاتھ دھوئیے from BBCوائرس سے بچنے کے لیے ایسے ہاتھ دھوئیے

   
     * BBC

   (BUTTON) Play video وائرس سے بچنے کے لیے ایسے ہاتھ دھوئیے from BBC
   RTL
   (BUTTON) Play video اینٹی باڈی ٹیسٹ کیا ہوتا ہے اور یہ کیوں اہم ہے؟ from BBC
   (BUTTON) I'll sign in later

   And we'll keep you signed in.

   Sign in or Register
   Why sign in to the BBC?

Got a TV Licence?

   You need one to watch live TV on any channel or device, and BBC programmes on iPlayer. It’s the law.
   Find out more
   (BUTTON) I have a TV Licence. Watch now.I don’t have a TV Licence.

خلاصہ

    1. دنیا بھر میں کورونا وائرس کے متاثرین کی تعداد 56 لاکھ 18 ہزار سے بڑھ چکی ہے جبکہ اموات کی مجموعی تعداد ساڑھے تین لاکھ سے زیادہ ہے۔
    2. عالمی ادارہِ صحت نے حفاظتی خدشات کے پیش نظر کووِڈ 19 کے ممکنہ علاج کے لیے استعمال ہونے والی دوائی ہائیڈروکسی کلوروکوین کے ٹرائل معطل کر دیے ہیں۔
    3. جس دن روس میں ’یومیہ ہلاکتوں کی سب سے زیادہ تعداد‘ رپورٹ ہوئی اسی دن روسی صدر ولادیمیر پوتن کا کہنا تھا کہ روس میں کورونا وائرس کی وبا کا عروج گزر چکا ہے۔
    4. پاکستان میں متاثرین کی تعداد 60 ہزار کے قریب ہے جبکہ اموات کی کُل تعداد 1225 ہے۔
    5. اس وقت کووڈ 19 کے سب سے زیادہ متاثرین امریکہ میں ہیں جن کی تعداد 16 لاکھ 80 سے زائد ہے۔
    6. پاکستان میں متاثرین کی سب سے بڑی تعداد صوبہ سندھ میں ہے جبکہ صوبہ خیبر پختونخوا ہلاکتوں میں بدستور سرفہرست ہے۔

     * (BUTTON) لائیو رپورٹنگ
     * (BUTTON) اسی بارے میں

لائیو رپورٹنگ

   time_stated_uk
    1. پوسٹ کیا گیا 19:12 27 مئ 202019:12 27 مئ 2020

یہ صفحہ اب مزید اپ ڈیٹ نہیں کیا جا رہا
       پاکستان اور دنیا بھر میں کووڈ 19 کے متاثرین اور اموات کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے۔
       پاکستان اور دنیا بھر سے تازہ ترین صورتحال جاننے کے لیے یہاں کلک کریں۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
    2. پوسٹ کیا گیا 19:01 27 مئ 202019:01 27 مئ 2020

کورونا اور محبت: سماجی دوری کے زمانے میں محبتیں کیسے بڑھ رہی ہیں؟
       کورونا وائرس کی وجہ سے جہاں زندگی کے دوسرے معاملات اب الیکٹرانک روپ اختیار کر رہے ہیں، وہیں آن لائن ڈیٹنگ کے رجحان میں بھی اضافہ ہوا ہے۔‍اس ڈیجیٹل ویڈیو میں دیکھیے کہ سماجی دوری کے زمانے میں ڈیٹنگ کے لیے نوجوان کیا طریقے اختیار کر رہے ہیں۔
       View more on facebookView more on facebook
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
    3. پوسٹ کیا گیا 19:00 27 مئ 202019:00 27 مئ 2020

کورونا وائرس کا ٹیسٹ کیسے ہوتا ہے اور کیوں ضروری ہے؟
       g
       Getty ImagesCopyright: Getty Images
       دنیا میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے اور جہاں اس سے 200 سے زیادہ ممالک میں 25 لاکھ سے زیادہ افراد متاثر ہو چکے ہیں وہیں ہلاکتوں کی تعداد بھی ایک لاکھ 71 ہزار سے بڑھ چکی ہے۔
       دنیا بھر کی حکومتوں نے کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں مختلف طریقوں سے اپنا ردِعمل ظاہر کیا ہے اور عالمی ادارۂ صحت نے جن چیزوں کو اس کوشش میں سب سے اہم قرار دیا ہے ان میں سے ایک اس بیماری کی تشخیص کے لیے زیادہ سے زیادہ افراد کی ٹیسٹنگ کا عمل ہے۔
       دنیا میں کورونا وائرس کے ٹیسٹ کرنے کا عمل مختلف ممالک میں مختلف رفتار سے جاری ہے۔ امریکہ میں جہاں ابتدا میں اس عمل میں سست رفتاری دکھائی دی وہ اب دنیا میں سب سے متاثرہ ملک بن چکا ہے اور اب وہاں ٹیسٹنگ کے عمل میں تیزی آئی ہے۔
       وہیں جنوبی کوریا اور جرمنی جیسے ممالک نے وبا کے آغاز سے ہی جارحانہ انداز میں ٹیسٹنگ کا عمل شروع کیا جس کا نتیجہ وہاں کم اموات کی صورت میں نکلا ہے۔
       پاکستان کی بات کی جائے تو وہاں بھی ابتدا میں بہت کم ٹیسٹ کیے گئے اور 15 اپریل تک اگر دیکھا جائے تو ملکی سطح پر دس لاکھ افراد میں ٹیسٹوں کی شرح 360 کے لگ بھگ تھی۔
       سوال یہ ہے کہ دنیا میں کورونا وائرس کی تشخیص کے لیے کون کون سے ٹیسٹ دستیاب ہیں اور مختلف ممالک میں یہ کتنے وسیع پیمانے پر استعمال ہو رہے ہیں۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
    4. پوسٹ کیا گیا 18:40 27 مئ 202018:40 27 مئ 2020

سائنسدان اب بھی کورونا کے بارے میں کیا نہیں جانتے؟
       نول کووڈ 19 وائرس نے پوری دنیا میں اپنے پنجے گاڑے ہوئے ہیں اور دنیا بھر میں لاکھوں افراد اس سے متاثر ہیں، سائنسدان اس وائرس کی ویکسین بنانے میں کوشاں ہیں لیکن وہ اس وائرس کے متعلق کیا اور کتنا جانتے ہیں، جاننے کے لیے دیکھیے یہ ڈیجیٹل ویڈیو۔
       View more on facebookView more on facebook
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
    5. پوسٹ کیا گیا 18:22 27 مئ 202018:22 27 مئ 2020

کورونا وائرس کی وبا آخر کب ختم ہوگی؟
       کورونا وائرس کی وجہ سے اب دنیا بھر میں اربوں لوگ لاک ڈاؤن کی وجہ سے اپنے اپنے گھروں میں بند ہیں۔ معیشتوں کو شدید نقصان پہنچا ہے اور کروڑوں افراد بے روزگار ہوئے ہیں۔ مگر کیا یہ وبا کبھی ختم ہوگی اور اگر ہاں تو اس میں کتنا عرصہ لگ سکتا ہے، دیکھیے اس ڈیجیٹل ویڈیو میں۔
       View more on facebookView more on facebook
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
    6. پوسٹ کیا گیا 18:00 27 مئ 202018:00 27 مئ 2020

بریکنگبلوچستان: مزید 80 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق
       g
       Getty ImagesCopyright: Getty Images
       بلوچستان کے صوبائی محکمہ صحت کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران صوبے میں کورونا وائرس کے 80 نئے مریض سامنے آئے ہیں جس کے بعد متاثرین کی کل تعداد 3613 ہو گئی ہے۔
       بلوچستان میں کورونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 42 ہے۔
       محکمہ صحت حکومت بلوچستان کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے 334 ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 80 پازیٹو آئے۔
       بلوچستان میں اب تک کورونا کے مجموعی طور 22200 ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں جن میں سے 18584 کے نتائج منفی آئے۔
       بلوچستان میں مجموعی طوپر پر 53520 افراد کی سکریننگ کی جا چکی ہے۔
       مشتبہ مریضوں کی تعداد 21151 ہے جبکہ کورونا وائرس سے اب تک 1289 افراد صحتیاب ہوئے ہیں۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
    7. پوسٹ کیا گیا 17:38 27 مئ 202017:38 27 مئ 2020

بریکنگگلگت بلتستان: کووڈ 19 کے 13 نئے مریض، متاثرین کی کل تعداد 651 ہو گئی
       bbc
       BBCCopyright: BBC
       گلگت بلتستان میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 13 نئے مریض سامنے آنے کے بعد مصدقہ متاثرین کی تعداد 651 ہوگئی ہے۔
       گلگت بلتستان میں کورونا وائرس سے اب تک نو اموات ہو چکی ہیں۔
       گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران چھ مریض صحت یاب ہوئے ہیں جس کے بعد صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 463 ہوگئی ہے جبکہ اس وقت 179 مریض زیر علاج ہیں۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
    8. پوسٹ کیا گیا 17:13 27 مئ 202017:13 27 مئ 2020

سماجی دوری کے لیے دو میٹر دور رہنے کا مطلب کیا ہے؟
       کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر عوام کو ایک دوسرے سے کم از کم دو میٹر کا فاصلہ رکھنے کو کہا گیا ہے لیکن سماجی دوری کا مطلب کیا ہے اور لوگوں کو اپنے درمیان کم از کم کتنا فاصلہ رکھنا چاہیے۔جاننے کے لیے دیکھیے یہ دلچسپ ویڈیو۔
       View more on facebookView more on facebook
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
    9. پوسٹ کیا گیا 17:00 27 مئ 202017:00 27 مئ 2020

بریکنگایران: 2080 نئے متاثرین، اموات کی تعداد 7564 ہو گئی
       t
       Getty ImagesCopyright: Getty Images
       ایرانی حکومت کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کووڈ 19 سے متاثرہ 2080 نئے متاثرین سامنے آئے، جس سے متاثرین کی سرکاری تعداد 141591 ہوگئی ہے۔
       وزارت صحت کے ترجمان کیانوش جہاں پور کا کہنا تھا کہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 56 مریض ہلاک ہوئے ہیں۔ جس سے اموات کی مجموعی تعداد 7564 ہو گئی ہے۔
       ان کا کہنا تھا کہ صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 111,176 جبکہ 2551 مریض تشویشناک حالت میں ہیں۔
       انھوں نے مزید بتایا کہ ملک میں اب تک 856,546 ٹیسٹ کروائے جا چکے ہیں۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   10. پوسٹ کیا گیا 16:42 27 مئ 202016:42 27 مئ 2020

وہ لاشیں جو کئی ہفتوں سے لندن کی مسجد میں پڑی ہیں
       مسجد میں لاشیں
       BBCCopyright: BBC
       ایرکن گونے کا کہنا ہے کہ انھوں نے گذشتہ چھ ہفتوں میں غیر معمولی تعداد میں جنازے پڑھائے ہیںImage caption: ایرکن گونے کا کہنا ہے کہ انھوں نے گذشتہ چھ ہفتوں میں غیر معمولی تعداد میں جنازے پڑھائے ہیں
       لندن کے علاقے ہیکنی کی ایک مسجد میں 18 ایسے ترک قبرصیوں (ٹرکش سیپریوٹس) کی لاشیں پڑی ہیں جن کا انتقال کئی ہفتے قبل ہو چکا ہے اور ان کی لاشیں ان کے آبائی ملک کو بھیجی جانی تھیں۔
       اسلامی طریقے سے تدفین عموماً مرنے کے 24 گھنٹے کے دوران کر دی جاتی ہے، لیکن شمالی قبرص نے کورونا وائرس کی وبا کے بعد اپنی سرحدیں بند کر دی تھیں۔
       حکام کا کہنا ہے کہ یکم جون کے بعد سرحدیں جزوی طور پر کھل جائیں گی اور زیادہ تر لاشوں کو جہازوں کے ذریعے بھیجنے کی منظوری دے دی گئی ہے۔
       ہیکنی کی مسجدِ رمضان کے جنازوں کے ڈائریکٹر ایرکن گونے نے کہا کہ انھوں نے گذشتہ چھ ہفتوں میں غیر معمولی تعداد میں جنازے پڑھائے ہیں، جو کہ برادری کے لیے بہت ’تکلیف دہ‘ بات ہے۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   11. پوسٹ کیا گیا 16:16 27 مئ 202016:16 27 مئ 2020

بورس جانسن: برطانیہ نے ماضی کی وباؤں سے کچھ نہیں سیکھا
       بورس جانسن
       BBCCopyright: BBC
       برطانوی وزیرِ اعظم بورس جانسن کا کہنا ہے ’بے رحم حقیقت یہ ہے کہ اس ملک نے پہلے والی وباؤں سے کچھ نہیں سیکھا اور نہ ہی ہمارے پاس ٹیسٹنگ کا کوئی ایسا آپریشن تھا جسے فوری استعمال کیا جا سکتا، لیکن اب ہمارے پاس بہتر نظام موجود ہے۔‘
       بورس جانسن ویڈیو لنک کے ذریعے برطانوی ممبر پارلیمان کے سوالوں کے جواب دے رہے تھے۔
       انھوں نے کہا کہ پبلک ہیلتھ انگلینڈ کے پاس اتنی صلاحیت نہیں تھی کہ وہ پہلے ٹریکنگ سسٹم کو لانچ کرے اور نہ ہی ہمارے پاس اتنے تجربہ کار ٹریکرز تھے جو اس طرح کا آپریشن کریں جیسا کچھ دوسرے ممالک میں ہوا ہے۔
       ہیلتھ کمیٹی کے سربراہ، ایم پی اور سابق کنزرویٹیو وزیرِ صحت جیریمی ہنٹ نے کہا کہ ٹریک اینڈ ٹریس ایک ’گیم چینجر‘ ہو سکتا تھا، لیکن یہ اس وقت ہی ممکن تھا جب بڑے پیمانے پر ٹیسٹ کیے جاتے، انھوں نے وزیرِ اعظم سے پوچھا کہ کیوں ایک لاکھ ٹیسٹ کے ہدف کا اعلان کرنے میں اپریل تک کا وقت لگا؟
       بورس جانسن کا مزید کہنا تھا کہ وائرس کے ساتھ بہت زیادہ مسائل تھے، جیسا کہ لوگ علامات دکھانے سے پہلے ہی اسے دوسروں تک پھیلا سکتے تھے۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   12. پوسٹ کیا گیا 16:02 27 مئ 202016:02 27 مئ 2020

قبرص کا اعلان: سیاحوں کو کووڈ 19 کا شکار ہونے پر چھٹیوں کا خرچ دیا جائے گا
       قبرص
       Getty ImagesCopyright: Getty Images
       بحیرہ روم کے سیاحوں میں مقبول جزیرے قبرص کی حکومت نے اعلان کیا ہے کہ اگر کوئی سیاح اس جزیرے پر آنے کے بعد کورونا کا شکار ہوا تو وہ اس کی چھٹیوں کا خرچ ادا کرے گی۔
       بدھ کو کیے جانے والے اس اعلان میں کہا گیا ہے کہ حکومت مریض اور اس کے اہل خانہ کی رہائش، خوراک اور علاج کا پورا خرچ ادا کرے گی۔ اعلان کے مطابق سیاحوں کو صرف اپنی فلائیٹ کا خرچ خود اٹھانا پڑے گا۔
       جانز ہاپکنز یونیورسٹی کے مطابق قبرص میں اب تک 939 لوگ کورونا سے متاثر ہوئے اور 17 اموات ہوئی ہیں۔
       سیاحت گزشتہ سال قبرص کی جی ڈی پی کا 15 فیصد تھا اور اسی لیے اب حکومت جلد سے جلد سیاحوں کو دوبارہ اس جزیرے پر واپس لانا چاہتی ہے۔
       حکام نے یہ بھی بتایا کہ کووڈ 19 کا شکار ہونے والے سیاحوں کے لیے 100 بستروں کا ایک ہسپتال بھی مختص کیا جائے گا اور ان کے اہل خانہ کو قرنطینہ میں رکھنے کے لیے ہوٹل مختص کیے جائیں گے۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   13. پوسٹ کیا گیا 16:02 27 مئ 202016:02 27 مئ 2020

کیا امیر ممالک کووڈ 19 کی ویکسین کی ’ذخیرہ اندوزی‘ کر سکتے ہیں؟
       g
       Getty ImagesCopyright: Getty Images
       کورونا وائرس کی ویکسین سے متعلق ہونے والی فنڈنگ کانفرنس سے امریکہ اور روس غیر حاضر تھے جبکہ چین نے ویکسین کی تیاری اور علاج پر تحقیق کے لیے براہ راست مالی مدد کا کوئی وعدہ نہیں کیا۔
       فارماسوٹیکل طاقت کے دو مراکز: امریکہ اور چین کی علیحدہ ویکسین تیاری کی کوشش ایک پریشان کن صورتحال کی طرف اشارہ کر رہی ہے۔
       یورپین ممالک کا خیال ہے کہ اس وائرس کے لیے تیار ہونے والی ویکسین پر تمام ممالک کی ملکیت کا حق تسلیم کیا جانا چائیے۔ یورپی ممالک کے اس خیال کی تائید کرنے والے ممالک کو تشویش ہے کہ اس وقت ویکسین کی تیاری کے لیے ایک مقابلہ نظر آ رہا ہے۔
       ماہر جینیات کیٹ براڈیریک سائنسدانوں کی اس ٹیم کا حصہ ہیں جو دنیا بھر میں کووڈ 19 کے لیے ایک ویکسین تیار کرنے کی کوشش کرنے والے 44 منصوبوں میں سے ایک ہے۔
       وہ امریکہ کی بائیو ٹیکنالوجی کمپنی اینویو میں محققین کی ایک ٹیم کا حصہ ہیں جو دسمبر تک اس ویکسین کی دس لاکھ خوراکیں تیار کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ لیکن یہ ویکسین کہاں اور اور کن لوگوں کو ملے گی۔
       مزید پڑھیے بی بی سی کے نامہ نگار فیرنانڈو ڈیوارٹ کی اس رپورٹ میں۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   14. پوسٹ کیا گیا 15:50 27 مئ 202015:50 27 مئ 2020

بریکنگروس میں کووڈ 19 متاثرین کی تعداد تین لاکھ 70 ہزار سے تجاوز کر گئی، تقریباً 4000 اموات
       ببث
       BBCCopyright: BBC
       روس میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 8338 نئے متاثرین اور مزید 161 اموات کی تصدیق کی گئی ہے۔
       ماسکو میں قائم کورونا وائرس ہیڈ کوارٹر نے 27 مئی کو اپنے ٹیلیگرام چینل پر بتایا کہ انفیکشن کی مجموعی تعداد 370،680 تک پہنچ گئی ہے اور ہلاکتوں کی کل تعداد 3968 ہے۔
       گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران صرف ماسکو میں 2140 متاثرین سامنے آئے۔
       ملک بھر میں اب کل 142،208 افراد اس بیماری سے پوری طرح صحت یاب ہو چکے ہیں۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   15. پوسٹ کیا گیا 15:39 27 مئ 202015:39 27 مئ 2020

’لاک ڈاؤن جینریشن‘ کئی دہائیوں تک متاثر رہ سکتی ہے
       لاک ڈاؤن جنریشن
       Getty ImagesCopyright: Getty Images
       اقوامِ متحدہ کی ایک ایجنسی نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی وبا نے معیشتوں کو نقصان پہنچایا ہے اور دنیا بھر میں بے روز گاری بڑھائی ہے۔ ایجنسی کے مطابق نوجوان ورکرز اس سے غیر متناسب طور پر متاثر ہوئے ہیں۔
       انٹرنیشنل لیبر آرگنائزیشن (آئی ایل او) کی ایک رپورٹ کے مطابق 29 سال سے کم عمر افراد میں چھ میں سے ایک یا اس سے زیادہ نے وبا کے شروع ہونے کے بعد سے کام چھوڑ دیا ہے اور نوجوان سب سے زیادہ متاثر ہیں۔
       اس کے مطابق کووڈ۔19 اس ’لاک ڈاؤن جینیریشن‘ کے کیریئر کے مواقعوں کو آنے والی کئی دہائیوں تک متاثر کر سکتا ہے۔
       آئی ایل او کے سربراہ گائے رائیڈر نے کہا کہ ’عالمی وبا کے فوری اثرات کا لوگوں پر مستقل نشان رہے گا۔‘
       آئی ایل او کے مطابق اگرچہ ابھی تک وائرس سے دنیا بھر میں 3 لاکھ 50 ہزار سے زیادہ تصدیق شدہ ہلاکتیں ہوئی ہیں، لیکن اس نے نوکریوں کو تباہ کیا ہے، تعلیم میں خلل ڈالا ہے اور ان لوگوں کے لیے رکاوٹیں کھڑی کر دی ہیں جو مزدوری کرنا چاہتے تھے۔
       ایجنسی نے فوری طور پر نوجوانوں کی مدد کے لیے بڑے پیمانے پر پروگراموں کا مطالبہ کیا ہے۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   16. پوسٹ کیا گیا 15:29 27 مئ 202015:29 27 مئ 2020

خیبر پختونخوا میں آج سے دکانیں شام 5 بجے بند ہوں گی، اجمل وزیر
       اجمل
       KPK information departmentCopyright: KPK information department
       خیبر پختونخوا کے مشیر اطلاعات اجمل خان وزیر نے کہا ہے کہ عید الفطر گزرنے کے بعد کورونا خطرات کے پیش نظر دوبارہ عید سے پہلے والے معمولات پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے گا اور شام 5 بجے کے بعد ضروری دکانوں کے علاوہ تمام دکانیں بند رہیں گی۔
       پشاور کے مختلف بازاروں میں ایس او پیز کا جائزہ لینے کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ دکانیں ہفتے میں چار دن پیرسے جمعرات کو شام 5 بجے تک کھلی رہیں گی جبکہ حجام اور سیلون ہفتے میں تین دن جمعہ ہفتہ اور اتوار کو کھلے رہیں گے اور ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کو یقینی بنایا جائیگا۔
       اجمل وزیر کا کہنا تھا ’وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں حکومت دو جنگیں لڑرہی ہیں ایک کورونا کے خلاف اور دوسری غربت و افلاس کے خلاف۔‘
       ان کا کہنا تھا ’ہماری ملک کی کافی آبادی غربت کی لکیر سے نیچے زندگی گزار رہی ہے یہی وجہ ہے کہ حکومت نے لاک ڈاون میں نرمی کی۔‘
       مشیر اطلاعات نے ذخیرہ اندوزوں کو خبردار کرتے ہوئے بتایا کہ ذخیرہ اندوزوں سے نمٹنے کے لیے آرڈنینس لایا گیا ہے۔ جس میں ذخیرہ اندوزوں کے لیے سخت سزائیں مقرر کی گئی ہے اور اس میں کسی قسم کی نرمی نہیں کی جائے گی۔
       مشیر اطلاعات کا یہ بھی کہنا تھا کہ لاک ڈاون میں سختی اور نرمی دونوں عوام کے تحفظ کے لیے ہے اور ایس او پیز پر عمل درآمد کی صورت میں مزید نرمیاں بھی کی جائیں گی۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   17. پوسٹ کیا گیا 15:09 27 مئ 202015:09 27 مئ 2020

ماسک پہنتے ہوئے کن چیزوں کا خیال رکھنا چاہیئے؟
       جیسے جیسے لاک ڈاؤن میں نرمی ہو رہی ہے، دنیا بھر میں پہلے سے زیادہ لوگ اپنی حکومت کے مشوروں کے تحت ماسک پہن رہے ہیں۔ عالمی ادارہ صحت نے متنبہ کیا ہے کہ ماسک صرف اس صورت میں موثر ثابت ہوتے ہیں جب مناسب طریقے سے پہننے کے ساتھ بار بار ہاتھوں کی صفائی اور سماجی فاصلے کا خیال رکھا جائے۔ماسک پہنتے ہوئے کن چیزوں کا خیال رکھنا چاہیئے؟ یہ جاننے کے لیے دیکھیں یہ ویڈیو
       View more on facebookView more on facebook
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   18. پوسٹ کیا گیا 14:38 27 مئ 202014:38 27 مئ 2020

بریکنگخیبر پختونخوا: کورونا وائرس کے 224 نئے مریض، مزید 9 اموات
       اموات کی مجموعی تعداد 425 ہو گئی
       خیبر پختونخواہ میں کورونا وائرس سے متاثرہ 224 نئے مریضوں کی تصدیق ہوئی ہے جس کے بعد صوبے میں متاثرین کی کل تعداد 8483 ہو گئی ہے۔
       محمکہ صحت خیبر پختونخواہ کے مطابق صوبے میں وائرس سے متاثرہ مزید 9 افراد ہلاک ہو گئے ہیں جس کے بعد اموات کی تعداد 425 ہو گئی ہے۔
       گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 54 مریض صحت یاب ہوئے ہیں۔ اس طرح صحتیاب ہونے والوں کی کل تعداد 2632 ہو گئی ہے۔
       View more on twitterView more on twitter
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   19. پوسٹ کیا گیا 14:36 27 مئ 202014:36 27 مئ 2020

بریکنگبرطانوی ہسپتالوں میں کورونا سے ہلاکتوں کے تازہ اعداد و شمار
       g
       Getty ImagesCopyright: Getty Images
       انگلینڈ میں این ایچ ایس کے مطابق ہسپتالوں میں کورونا ٹیسٹ پازیٹیو آنے ولے مزید 183 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ اس طرح انگلینڈ کے ہسپتالوں میں کووڈ 19 سے ہلاک ہونے والے افراد کی کل تعداد 26،049 ہو گئی ہے۔
       سکاٹ لینڈ میں کورونا وائرس کے مصدقہ 13 مریض مزید ہلاک ہوئے ہیں اور ویلز میں یہ تعداد 11 ہے اور اس طرح اب تک ہلاک ہونے والے افراد کی کل تعداد 1ّ293 ہو گئی ہے۔
       سکاٹ لینڈ میں ہلاک ہونے والے کووڈ 19 کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 2304 ہے۔
       شمالی آئرلینڈ میں مزید 2 مصدقہ مریض ہلاک ہوئے ہیں اور اب تک کی کل تعداد 516 ہے۔
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)
   20. پوسٹ کیا گیا 14:24 27 مئ 202014:24 27 مئ 2020

ڈی ایچ کیو ایبٹ آباد: چھ ڈاکٹروں سمیت طبی عملے کے 28 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق
       محمد زبیر خان، صحافی
       bbc
       bbcCopyright: bbc
       خیبر پختونخوا کے ڈسڑکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ایبٹ آباد میں طبی عملے کے 28 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔
       صوبائی ڈاکٹرز ایسوسی ایشن خیبر پختونخواہ کے ترجمان ڈاکٹر سلیم خان یوسفزئی کے مطابق ان میں چھ ڈاکٹر، پانچ ایل ایچ وی، پانچ نرسنگ سٹاف، تین دائیاں اور عملے کے دیگر نو افراد شامل ہیں۔
       ان کا کہنا تھا کہ ’حفاظتی سامان کی کمی اور ہماری دی گئی تجاویز پر عمل نہ ہونے ڈاکٹرز اور دیگر ملازمین کی زندگیاں خطرے میں ہیں۔ حکومت ہمارے تجاویز پر عمل کروائے تاکہ موثر انداز میں کرونا کے خلاف لڑا جا سکے۔ ‘
       انھوں نے مطالبہ کیا کہ ڈی ایچ کیو ہسپتال کو ورلڈ ہیلتھ آرگنازیشن کے پروٹوکول کے مطابق دو ہفتے کے لیے فی الفور بند کیا جائے اور تمام عملے کے ٹیسٹ کئے جائیں اور ہسپتال کو ڈس انفیکٹ کرنے کے بعد دوبارہ کھولا جائے۔
       ڈاکٹر سلیم خان یوسفزئی کا کہنا تھا کہ کورونا کا مقابلہ کرنے کے لیے سماجی فاصلے لازمی ہیں۔ ’لاک ڈاون میں نرمی کرکے حالات کو سنگین بنا دیا گیا ہے۔ ہم بار بار کہہ رہے ہیں اور بتا رہے ہیں حکومت اور عوام نے ڈاکٹروں کی تجاویزات پر عمل نہ کیا تو حالات قابو سے باہر ہوسکتے ہیں۔‘
       ان کا کہنا تھا کہ ہسپتالوں میں کام کرنے والے ڈاکٹرز اور دیگر عملے کے کورونا کا شکار ہونے پر ہسپتالوں کو بند کرنا پڑے گا تو عوام علاج کے لیے کہاں جائیں گے۔
       ’ہم حکومت سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ لاک ڈاون میں نرمی کرنے کے فیصلوں کا دوبارہ جائزہ لیں، عوام سے کہتے ہیں کہ کورونا کو مذاق نہ سمجھیں۔ یہ وبا ہے بے شک اس سے نہ ڈریں مگر احتیاط کرئیں۔‘
       ان کا کہنا تھا کہ ’اگر نوجوان یہ سمجھتے ہیں کہ انھیں اس وائرس سے نقصان نہیں ہوگا تو یہ کسی حد تک ٹھیک ہے کہ مگر وہ کئی لوگوں کے لیے مسائل کا سبب بن رہے ہیں۔
       ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر مریضوں کی تعداد اس شرح سے اور بڑھی تو ہمیں خدشہ ہے کہ صوبہ خیبر پختونخواہ میں پورا صحت کا نظام بیٹھ جائے گا۔
       ڈاکٹر سلیم خان یوسفزئی کے مطابق اس وقت صوبہ خیبرپختونخواہ میں متاثرہ طبی عملے کی تعداد تقریباً 550 سے اوپر ہوچکی ہے۔ جس میں صرف تین سو ڈاکٹر شامل ہیں۔
       g
       Getty ImagesCopyright: Getty Images
       Article share tools
          + (BUTTON) Facebook
          + (BUTTON) Twitter
          + (BUTTON) شیئر کریںشیئر کرنے کے لیے مزید آپشن دیکھ„یں
            Share this post (BUTTON)
               o Copy this link ?ns_mchannel=social& (BUTTON)
            ان لنکس کے بارے میں مزید پڑھیں
            (BUTTON)

   صفحہ 1 سے 25
   Navigate to the next page
   Navigate to the last page
   
   واپس اوپر جائیں

اسی بارے میں

   

کیا امیر ممالک کووڈ 19 کی ویکسین ’ذخیرہ‘ کر سکتے ہیں؟

   

   غریب ممالک میں ویکسین تک رسائی بڑھانے کے لیے کام کرنے والے ادارے گیوی کے سربراہ اور وبائی امراض کے ماہر سیٹھ برکلے خدشہ ظاہر کرتے ہیں کہ کورونا وائرس کی ویکسین بہت مہنگی ہو سکتی ہے یا اس کے عالمی سطح پر دستیاب ہونے میں زیادہ وقت لگ سکتا ہے۔
   اسی بارے میں
   

کیا آپ صحت یابی کے بعد دوبارہ کورونا کا شکار ہو سکتے ہیں؟

   

   عام نزلہ زکام جیسے انفیکشن کا شکار ہونے والے مریض میں عموماً ایسی بیماریوں کے خلاف مدافعت بھی پیدا ہو جاتی ہے مگر کورونا وائرس کے معاملے میں ایسا نہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کی علامات کیا ہیں اور اس سے کیسے بچیں؟

   

   دنیا میں کورونا سے متاثر ہونے والے 80 فیصد افراد میں اس کی معمولی علامات ہی دکھائی دی ہیں اور ایسے لوگ جن میں یہ علامات شدت سے پائی گئیں اقلیت میں ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کی وبا آخر کب ختم ہوگی؟

   

   کورونا وائرس کی وجہ سے دنیا بھر میں اربوں لوگ لاک ڈاؤن کی وجہ سے اپنے اپنے گھروں میں بند ہیں اور کروڑوں افراد بے روزگار ہوئے ہیں۔ ایسے میں لوگ یہ سوال کر رہے ہیں کہ یہ وبا کب ختم ہوگی؟
   اسی بارے میں
   

سائنسدان کووڈ-19 کے بارے میں کتنا جانتے ہیں؟

   

   نول کویڈ-19 وائرس نے پوری دنیا میں اپنے پنجے گاڑے ہوئے ہیں اور دنیا بھر میں لاکھوں افراد اس سے متاثر ہیں، سائنسدان اس وائرس کے متعلق کیا اور کتنا جانتے ہیں؟
   اسی بارے میں
   

1000 برس پہلے ویکسین کا خیال کہاں سے آیا تھا؟

   

   کھرنڈ پیس کر مریضوں کی ناک میں چڑھانا یا زخم کی پس تندرست فرد کو لگانا سننے میں تو بہت عجیب لگتا ہے لیکن ویکسین کی تیاری کی تاریخ میں ان دونوں اعمال کا بہت اہم کردار ہے۔
   اسی بارے میں
   

وائرس سے بچنے کے لیے ہاتھ کیسے دھوئیں؟

   

   باقاعدگی سے ہاتھ دھونا کورونا وائرس اور دیگر ہیماریوں سے بچنے کا سب سے موذوں طریقہ ہے تاہم عین ممکن ہے کہ آپ اپنے ہاتھ صحیح طریقے سے نہیں دھوتے۔
   اسی بارے میں
   

فون کو جراثیم سے پاک کرنے کا صحیح طریقہ

   

   آپ اپنی روز مرہ زندگی میں موبائل فون کا سب سے زیادہ استعمال کرتے ہیں لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ فون کو جراثیم سے پاک کرنے کا صحیح طریقہ کیا ہے؟
   اسی بارے میں
   

کورونا کی وجہ سے سماجی دوری، یہ دو میٹر ہوتا کتنا ہے؟

   

   تین آسٹریلوی کوالا ہوں یا ایک مائیکل جورڈن یا پھر نصف واکس ویگن بیٹل، یہ وہ فاصلہ ہے جتنا آپ کو کسی بھی فرد سے کورونا کی وبا کے دوران سماجی دوری اختیار کرتے ہوئے رہنا چاہیے۔
   اسی بارے میں
   

دو میٹر کی دوری کا مطلب کیا ہے؟

   

   کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر عوام کو ایک دوسرے سے کم از کم دو میٹر کا فاصلہ رکھنے کو کہا گیا ہے لیکن سماجی دوری کا مطلب کیا ہے اور لوگوں کو اپنے درمیان کم از کم کتنا فاصلہ رکھنا چاہیے۔جاننے کے لیے دیکھیے یہ دلچسپ ویڈیو۔
   اسی بارے میں
   

لاک ڈاؤن کو بچے کس نظر سے دیکھ رہے ہیں؟

   

   دنیا بھر میں بچے کورونا وائرس کی وجہ سے ہونے والے لاک ڈاؤن کے دوران گھر میں گزارے گئے وقت کو بیان کرنے کے لیے تصاویر کا سہارا لے رہے ہیں۔ دیکھیے بی بی سی کی ڈیجیٹل ویڈیو۔
   اسی بارے میں
   

سماجی دوری کے زمانے میں محبتیں کیسے بڑھ رہی ہیں؟

   

   کورونا وائرس کی وجہ سے جہاں زندگی کے دوسرے معاملات اب الیکٹرانک روپ اختیار کر رہے ہیں، تو وہیں آن لائن ڈیٹنگ کے رجحان میں بھی اضافہ ہوا ہے اور زیادہ سے زیادہ نوجوان ویڈیو ڈیٹنگ کر رہے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

اچھی خبر یہ ہے کہ۔۔۔

   

   دنیا میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ اور اس سے ہونے والے ہلاکتوں میں روزانہ اضافے کی خوفناک خبروں کے درمیان کچھ ایسی مثبت خبریں بھی ہیں جو شاید آپ کی نظر سے نہیں گزریں۔
   اسی بارے میں
   

غزہ کورونا وائرس کے محاصرے میں

   

   غزہ میں لاک ڈاؤن معمول کی بات ہے لیکن اس کی وجہ عالمی وبا نہیں ہوتی۔ وائرس پھیلنے کے خطرے کے پیشِ نظر امدادی مراکز بند ہو گئے ہیں جبکہ نظامِ صحت انتہائی مخدوش حالت میں ہے۔
   اسی بارے میں
   

قرنطینہ کاٹنے کے منفرد اور دلچسپ طریقے

   

   کورونا وائرس سے متاثرہ افراد یا ان سے رابطے میں آنے والوں کو قرنطینہ یا تنہائی میں رکھا جاتا ہے۔ لیکن کچھ لوگ ایسے بھی ہیں جو دلچسپ طریقوں سے اپنے آپ کو دوسروں سے الگ تھلگ رکھے ہوئے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

سائنسدانوں کی مدد کے لیے کورونا وائرس کا 20 لاکھ گنا بڑا مجسمہ

   

   برطانوی فنکار لیوک جیریم نے کورونا وائرس کا ایک ایسا نمونہ بنایا ہے جو حجم میں اصل وائرس سے 20 لاکھ گنا بڑا ہے۔ اس کا مقصد وائرس پر تحقیق کرنے والے سائنسدانوں کی مدد کرنا ہے۔
   اسی بارے میں
   

تنہائی میں بوریت دور کرنے کے لیے آن لائن فنکار حاضر

   

   کورونا کی وجہ سے موسیقی کی محفلیں ہوں یا کلب کی تقریبات، وہاں جانے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا سو ایسے میں کچھ فنکاروں نے آپ کو تفریح کے مواقع گھر پر ہی فراہم کرنے کی کوشش کی ہے۔
   اسی بارے میں
   

کیسے پتا چلے کہ آپ کورونا وائرس سے متاثر تو نہیں؟

   

   کورونا وائرس کی دو اہم علامات ہیں۔ یہ بخار سے شروع ہوتا ہے جس کے بعد خشک کھانسی آتی ہے۔ مگر آپ کیسے جانچ سکتے ہیں کہ آپ کو کورونا وائرس کے سلسلے میں اپنے ڈاکٹر کے پاس جانا چاہیے یا آپ جو محسوس کر رہے ہو سکتے ہیں وہ شاید عام نزلہ اور زکام ہے؟
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس سے بچاؤ کے کونسے ٹوٹکے چلتے ہیں اور کونسے نہیں؟

   

   اسی بارے میں
   

خود ساختہ تنہائی کا مطلب کیا ہے؟

   

   اسی بارے میں
   

ہاتھ ملانے کے متبادل طریقے

   

   اسی بارے میں
   

عالمی وبا کیا ہوتی ہے؟

   

   کووِڈ 19 چین کے شہر ووہان سے شروع ہوا۔ یہ مہلک وائرس اب دنیا کے مختلف ممالک تک پھیل چکا ہے اور اسے عالمی وبا قرار دے دیا گیا ہے۔ جانیے کہ عالمی وبا کیا ہوتی ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کیا ہے، کیسے پھیلتا ہے؟

   

   اسی بارے میں
   

کورونا:جانوروں سے انسانوں میں منتقلی کی کڑیاں شاید کبھی نہ ملیں

   

   ایسے ہی وائرس کمیاب اور سمگل شدہ پینگولین (چیونٹی خور) کے جسموں میں بھی پائے گئے ہیں۔ مگر حالیہ وبا کے انتقال میں ان انواع پر کسی طرح کا شبہ نہیں ہے۔ البتہ یہ بات طے ہے کہ جنگلی جانوروں کے کاروبار اور ان سے رابطے میں آنا انسانوں اور ان جانوروں دونوں کے لیے خطرناک ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کا ٹیسٹ کیسے ہوتا ہے اور کیوں ضروری ہے؟

   

   دنیا بھر کی حکومتوں نے کورونا وائرس کے خلاف مختلف طریقوں سے اپنا ردِعمل ظاہر کیا ہے اور اس سلسلے میں سب سے واضح نظر آنے والا مختلف پہلو، اس بیماری کی ٹیسٹنگ یا جانچ کا طریقہِ کار ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس اور نزلہ زکام میں فرق کیا ہے؟

   

   اس موسم میں جب نزلے زکام کے باعث چھینک یا کھانسی آئے تو کیسے پتہ چلے گا کہ یہ عام فلُو ہے یا پھر خطرناک کورونا وائرس اور اس سے بچا کیسے جائے؟
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس انسانی جسم پر کیسے حملہ آور ہوتا ہے

   

   چین سے شروع ہو کر دنیا کے بیشتر ممالک میں پھیلنے والے کورونا وائرس کے انفیکشن سے لڑنے والے ڈاکٹروں کی لڑائی ایسی ہے جیسے وہ کسی نامعلوم دشمن کے خلاف لڑ رہے ہوں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس سے آپ کیسے محفوظ رہ سکتے ہیں؟

   

   کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے کیا کریں؟ جانیے کہ آپ کیا اقدامات کر کے اس سے محفوظ رہ سکتے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس آپ کے جسم کے ساتھ کرتا کیا ہے؟

   

   کورونا وائرس جسم پر کیسے اثر انداز ہوتا ہے، اس کے نتیجے میں کچھ افراد ہلاک کیوں ہو رہے ہیں اور اب تک اس بیماری کا علاج کیسے کیا جارہا ہے؟
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے والوں سے خون کا عطیہ دینے کی اپیل

   

   یہ امید کی جا رہی ہے کہ کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی اینٹی باڈیز اب دوسرے مریضوں سے اس وائرس کے خاتمے کی وجہ ہو گی۔ امریکہ نے 1500 سے زائد ہسپتالوں میں اس بڑے تحقیقاتی منصوبے کا آغاز کر دیا ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کو قابو کرنے کے پانچ ثابت شدہ طریقے

   

   امریکہ اس وبا کا نیا مرکز بن گیا ہے جبکہ اس کے علاوہ یورپ، مشرق وسطیٰ اور لاطینی امریکہ کے ممالک میں روز بروز کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے مگر کچھ ممالک اس وبا کے بے ہنگم پھیلاؤ پر قابو پانے میں کامیاب بھی ہوئے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کیا امریکہ نے کورونا کے علاج کے لیے کلوروکوئن کی منظوری دے دی ہے؟

   

   امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دعویٰ کیا ہے کہ ملیریا کے علاج کے لیے استعمال ہونے والی ایک دوائی، کلوروکوئن، کو امریکہ نے کووِڈ 19 کے علاج کے لیے منظور کر لیا ہے۔ کیا یہ دعویٰ درست ہے؟
   اسی بارے میں
   

وینٹیلیٹر کیا ہوتا ہے اور یہ کیسے کام کرتا ہے؟

   

   آسان لفظوں میں جب مریض کے پھیپھڑے کام کے قابل نہ رہیں، وینٹیلیٹر انسانی جسم کے نظام تنفس کو سنبھال لیتا ہے۔ وینٹیلیٹر مریض کو انفیکشن سے لڑنے کے لیے مزید وقت مہیا کرتا ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس: ان چھ جعلی طبی مشوروں سے بچ کر رہیں

   

   کورونا وائرس بہت تیزی سے دنیا کے مختلف ممالک میں پھیل رہا ہے اور اب تک اس کا مصدقہ علاج دریافت نہیں ہو سکا ہے تاہم کورونا وائرس کے علاج کے حوالے سے سوشل میڈیا پر ٹوٹکوں اور طبی مشورے دینے کا سلسلہ جاری ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا کا ’کرشماتی علاج‘ جو وائرس سے بھی زیادہ خطرناک ہو سکتا ہے

   

   ایک زمانے سے لوگ ملیریا، ذیابیطس، دمہ، آٹزم اور یہاں تک کہ کینسر جیسی بیماریوں کے علاج کے لیے کلورین ڈائی آکسائیڈ کی تشہیر کرتے رہے ہیں۔ تاہم کسی بھی صحت کی تنظیم نے اسے دوا کے طور پر تسلیم نہیں کیا ہے۔
   اسی بارے میں
   

چہرے کو نہ چھونا اتنا مشکل کیوں؟

   

   ڈاکٹر اور طبی ماہرین کہتے ہیں کہ کورونا وائرس کو جسم میں داخل ہونے سے روکنے کے لیے ضروری ہے کہ ہم اپنے منھ، ناک اور آنکھوں کو بار بار چھونے سے اجتناب کریں۔ لیکن یہ کہنا آسان اور کرنا مشکل ہے کیونکہ ہم خود کو ہاتھ لگائے بغیر رہ نہیں سکتے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا کے بارے میں آپ کے سوال اور ان کے جواب

   

   دنیا میں جیسے جیسے کووِڈ-19 نامی کورونا وائرس سے متاثرہ ممالک کی تعداد بڑھتی جا رہی ہے عام آدمی کے ذہن میں اس بیماری کے بارے میں بہت سے سوالات جنم لے رہے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس سے ذیابیطس اور بلڈ پریشر کے مریضوں کو کتنا خطرہ ہے؟

   

   کورونا وائرس کی زد میں کوئی بھی آ سکتا ہے لیکن ان لوگوں کے لیے خطرہ زیادہ ہے جن کو پہلے سے ہی صحت کا مسئلہ ہے یا جو عمر دراز ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کیا آپ کورونا وائرس کو یو وی لائٹ کے ذریعے ختم کر سکتے ہیں؟

   

   صرف ایک طرح کی یو وی ہے جو قابلِ اعتبار طریقے سے کووڈ۔19 کو غیر فعال بنا سکتی ہے اور وہ بہت ہی خطرناک ہے
   اسی بارے میں
   

ایبوپروفن اور پیراسیٹامول، خطرناک یا کارآمد؟

   

   ماہرین نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی علامات کا مقابلہ کرنے کے لیے ایبوپروفن کی تجویز نہیں دی گئی۔ وہ لوگ جو کسی اور وجہ سے ایبوپروفن کا استعمال کرتے ہیں ان کے لیے ضروری ہے کہ کسی ڈاکٹر سے رجوع کریں۔
   اسی بارے میں
   

گائے کے پیشاب سے کورونا کا علاج اور دیگر ’بےبنیاد‘ دعوے

   

   انڈیا میں کورونا وائرس کا علاج قرار دے کر کئی چیزوں کو فروغ دیا جا رہا ہے جس میں گائے کا پیشاب، سبزی خوری اور خاص طرح کے گدے تک شامل ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کے ’ہومیوپیتھک علاج‘ پر انڈیا کی وضاحت

   

   انڈیا میں متبادل طریقۂ علاج کی وزارت کے بیان کا عنوان ’کورورنا وائرس انفیکشن سے بچاؤ کے لیے ہومیوپیتھی کا استعمال: یونانی ادویات کورونا وائرس انفیکشن کی علامات سے نمٹنے میں کارآمد‘ تھا۔
   اسی بارے میں
   

کیا آپ کو خود ساختہ تنہائی کی ضرورت ہے؟

   

   خود ساختہ طور پر تنہا رہنے کا مطلب ہے کہ آپ کو گھر پر رہنا ہو گا، آپ دفتر، سکول یا عوامی مقامات پر نہیں جا سکتے اور آپ ٹیکسی یا پبلک ٹرانسپورٹ پر سفر بھی نہیں کر سکتے۔
   اسی بارے میں
   

دنیا میں کورونا کہاں کہاں: جانیے نقشوں اور چارٹس کی مدد سے

   

   بی بی سی کے انٹرایکٹو نقشے اور چارٹس کی مدد سے جانیے کہ دنیا بھر میں کورونا کے متاثرین کی تعداد کیا ہے اور کون سے ملک اس سے سب سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کی ویکسین کب تک بن جائے گی؟

   

   کورونا وائرس کے علاج میں اب تک کیا پیش رفت ہوئی ہے اور کیا اس کا علاج کرنے کے لیے کوئی دوا سامنے آئی ہے۔ ان سب سوالات کا جواب جانیے بی بی سی کے نمائندہ صحت و سائنس کے اس مضمون میں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کا ٹیسٹ کب اور کیسے غلط ہوسکتا ہے

   

   اگر آپ کا سواب ٹیسٹ ہوتا ہے تو آپ کے منھ سے نمونہ لیا جاتا ہے جو ’پولیمریز چین ری ایکشن‘ یا پی سی آر ٹیسٹ کے لیے موزوں ہے۔ پاکستان میں زیادہ تر ٹیسٹ اسی طرح کی کٹس سے ہو رہے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کو سمجھنے کے لیے ’R` نمبر کی اتنی اہمیت کیوں ہے؟

   

   کورورنا وائرس کے خطرے کو سمجھنے کے لیے ریپروڈکشن نمبر ایک طریقہ ہے جس کے ذریعے بیماری کے پھیلنے کی صلاحیت کی درجہ بندی کی جاتی ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس: سماجی دوری اور خود ساختہ تنہائی کا مطلب کیا ہے؟

   

   کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے بعد جب حفاظتی اقدامات کا ذکر ہو تو اس سلسلے میں کچھ ایسی چیزیں سامنے آ رہی ہیں جن کے بارے میں شاید عام آدمی نہیں جانتا۔ بی بی سی کے اس مضمون کی مدد سے جانیے کہ سماجی دوری یا خود ساختہ تنہائی جیسے اقدامات کا مطلب کیا ہے۔
   اسی بارے میں
   

کیا ماسک آپ کو کورونا وائرس سے بچا سکتا ہے؟

   

   ماہرین فضا سے پھیلنے والے وائرس سے بچاؤ میں ماسک کے پُراثر ہونے کو شک کی نظر سے دیکھتے ہیں، لیکن وہ تجویز کیا کرتے ہیں؟
   اسی بارے میں
   

کورونا: کیا آپ کو اپنے بچوں کو دوسرے بچوں کے ساتھ کھیلنے دینا چاہیے؟

   

   پوری دنیا میں کورونا وائرس کے مزید پھیلنے کے خدشے کے پیش نظرسکول بند ہو رہے ہیں اور اس صورتحال میں والدین کو اس طرح کے سوالات کا سامنا ہے کہ ان کے بچے گھر پر رہ کر کیا کریں اور کیا نہ کریں؟
   اسی بارے میں
   

کیا آپ کو اب بھی سینیٹائزر نہیں مل رہے؟ جانیے ایسا کیوں ہے

   

   ہمیں بتایا جاتا رہا ہے کہ کورونا کی وبا کے دوران اپنے ہاتھ دھوئیں اور ہینڈ سینیٹائزر استعمال کریں لیکن کووڈ-19 وائرس کی وبا کے پھیلنے کے بعد سے بہت سارے لوگ سینیٹائزر کی تلاش میں کامیاب نہیں ہو سکے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

سماجی فاصلوں کا دورانیہ بڑھا تو زندگی کیسے تبدیل ہو گی؟

   

   دنیا بھر میں کروڑوں افراد اُن حالات سے مطابقت پیدا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں جو کورونا وائرس کے پھیلاو کو روکنے کے لیے لگائی گئی پابندیوں کی وجہ سے پیدا ہوئے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کس چیز پر کتنی دیر تک زندہ رہ سکتا ہے؟

   

   ابھی تک یہ واضح نہیں ہو سکاکہ یہ وائرس کتنی دیر تک انسانی جسم کے باہر زندہ رہتا ہے۔ ماضی کی کچھ تحقیقوں سے پتا چلا ہے کہ اس سے ملتے جلتے وائرس میٹل، شیشے یا پلاسٹک پر نو دن تک رہتے ہیں اگر انھیں صحیح سے صاف نہ کیا جائے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس: کیا سونگھنے اور چکھنے کی حس ختم ہونا مرض کی علامات ہیں؟

   

   برطانوی محققین کا کہنا ہے کہ اگر آپ سونگھنے اور چکھنے کی صلاحیت سے محروم ہو جائیں تو ہو سکتا ہے کہ یہ کورونا وائرس کی علامت ہو۔
   اسی بارے میں
   

کیا موسمِ گرما میں کورونا وائرس ختم ہو جائے گا؟

   

   مشکل یہ ہے کہ خطرناک متعدی بیماریاں اکثر عام وباؤں جیسا موسمی رجحان نہیں اپناتیں۔ مثال کے طور پر سنہ 1918 سے 1920 تک وبائی شکل اختیار کرنے والا اسپینش فلو گرمیوں کے موسم میں اپنی انتہا پر تھا۔ جبکہ زیادہ تر فلو سردیوں میں پھیلتے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کیا کورونا وائرس لاشوں سے بھی پھیل سکتا ہے؟

   

   کورونا وائرس کے متاثرہ افراد کی لاشوں میں کووڈ وائرس فعال ہو سکتا ہے۔ تو کیا تمام تر حفاظتی اقدامات اپناتے ہوئے ان لاشوں کی باعزت تدفین ممکن ہے یا نہیں؟
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس: بیماری کے خوف سے کیسے نمٹیں؟

   

   کورونا وائرس کا خوف اور اس سے جڑی مسلسل خبروں کی بھرمار انسانوں کی ذہنی صحت پر بھی اثر انداز ہو رہی خصوصاً ان پر جو پہلے ہی اضطرابی بیماریوں میں مبتلا ہیں۔
   اسی بارے میں
   

مدافعتی نظام بہتر بنا کر کیا آپ کووِڈ 19 سے بچ سکتے ہیں؟

   

   اگرچہ کووِڈ19 اور ہسپانوی فلو کا زمانہ مختلف ہے کیونکہ ایک صدی کے عرصے میں بہت سی سائنسی ایجادات ہو چکی ہیں، مگر اب بھی عطائی نسخے اور ٹوٹکے اسی طرح سے گردش میں ہیں جیسے تب تھے۔ بس فرق یہ ہے کہ اب وہ اس اعلان کے ساتھ مارکیٹ کیے جا رہے ہیں کہ یہ آپ کے جسم کا مدافعتی نظام بہتر بناتے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا کا شکار افراد کے مرنے کے امکانات کتنے ہوتے ہیں؟

   

   کورونا وائرس سے متاثرہ افراد میں اموات کی شرح کا حساب لگانا ایک پیچیدہ کام ہے کیونکہ فی الحال متاثرہ افراد کی صحیح تعداد معلوم کرنا ہی بہت مشکل ثابت ہو رہا ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کا آخری شکار کون سا ملک بنے گا؟

   

   جاپان، جنوبی کوریا اور امریکہ سے پہلے تھائی لینڈ میں کورونا کا ایک کیس سامنے آیا۔ اور پھر دنیا بھر میں متاثرین کی بھرمار ہو گئی۔ اب دنیا میں نیپال سے لے نیکاراگوا تک کورونا وائرس کے دس لاکھ سے زیادہ متاثرین موجود ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس سے صحتیاب ہونے میں کتنا وقت لگتا ہے؟

   

   ایک مریض کورونا سے صحتیاب کب ہوتا ہے یہ بیماری کی شدت پر منحصر ہے۔ کچھ لوگ اس بیماری سے جلدی صحتیاب ہوجاتے ہیں لیکن یہ ممکن ہے کہ کچھ مریضوں میں اس سے پیدا ہونے والے مسائل طویل مدتی ہوں۔
   اسی بارے میں
   

کیا لاک ڈاؤن کے دوران کھانے پینے کی عادات تبدیل ہونے پر پریشان ہونا چاہیے؟

   

   لاک ڈاؤن کے دوران لوگوں نے غیر صحت مندانہ طرز زندگی اختیار کر لیا ہے جیسا کہ غیر صحت مند خوراک کا زیادہ سے زیادہ استعمال اور زیادہ شراب نوشی۔
   اسی بارے میں
   

پہلے سے بیمار افراد کورونا وائرس سے کیسے بچیں؟

   

   دنیا بھر میں وبائی شکل اختیار کرنے والا کورونا وائرس کسی کو بھی ہوسکتا ہے۔ لیکن ان لوگوں کو کورونا وائرس سے خطرہ زیادہ ہے جو کہ ضیعف ہیں یا جنھیں پہلے سے صحت کے مسائل سے دوچار ہیں۔ جانیے کہ انہیں س طرح کی احتیاط کرنی چاہیے۔
   اسی بارے میں
   

کووڈ 19 کے مردوں اور عورتوں پر اثرات مختلف کیوں؟

   

   کووڈ 19 کے مردوں اور خواتین کی صرف صحت پر ہی نہیں بلکہ ہر اعتبار سے بہت مختلف اثرات مرتب ہوئے ہیں۔ ایک ایسا وائرس جو بلا تفریق ہر شخص کو متاثر کر رہا ہے اس کے صنف کے لحاظ سے اتنے مختلف اثرات کیوں ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کسی انسان کو چھوئے بغیر رہنا اتنا مشکل کیوں ہے؟

   

   آکسفورڈ یونیورسٹی میں ارتقا کے ماہر نفسیات پروفیسر رابن ڈنبر کا کہنا ہے کہ انسانوں کے لیے ’ٹچ (لمس)‘ انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور اس کی عدم موجودگی ہمارے قریبی تعلقات کو کمزور کر دیتی ہے۔
   اسی بارے میں
   

بڑے شہر کورونا وائرس کا پھیلاؤ کیسے روک سکتے ہیں؟

   

   مصروف شہر جہاں بھیڑ زیادہ ہوتی ہے وہاں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے کیا اقدام کیے جا سکتے ہیں؟
   اسی بارے میں
   

کیا کورونا وائرس کی وبا کے دوران سیکس کرنا محفوظ ہے؟

   

   شاید یہ سوال آپ کے ذہن میں بھی آیا ہو لیکن آپ اس بارے میں کسی سے بات کرنے میں شرمندگی محسوس کرتے ہوں۔ بی بی سی نے اس سے متعلقہ سوالات کو ماہرین صحت کے سامنے رکھ کر حقائق جاننے کی کوشش کی ہے۔
   اسی بارے میں
   

لاک ڈاؤن کے باوجود قریبی دوستوں سے ملنے کی اجازت ہونی چاہیے؟

   

   دنیا بھر میں اس تجویز پر غور کیا جا رہا ہے کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے تحت لوگوں کو اپنا سماجی دائرہ وسیع کرنے کی اجازت دی جائے تاکہ وہ اپنے چند منتخب رشتہ داروں اور دوستوں سے مل سکیں۔
   اسی بارے میں
   

کیا اقلیتی برادریاں کورونا وائرس سے زیادہ متاثر ہو رہی ہیں؟

   

   کورونا وائرس کسی کو بھی متاثر کر سکتا ہے لیکن مریضوں کے اعداد و شمار سے یہ بات سامنے آ رہی ہے کہ جن ممالک میں کورونا وائرس کی وبا بڑے پیمانے پر پھیل رہی ہیں وہاں اقلیتی طبقے دوسروں کی نسبت زیادہ متاثر ہو رہے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا: سوشل میڈیا پر گردش کرنے والے جھوٹے دعووں کی حقیقت جانیے

   

   کورونا کی وبا کے ساتھ ہی جھوٹی خبروں، کہانیوں اور دعوؤں کا بازار بھی گرم ہے، ہر طرف دکھائی دینے والی ایسی من گھڑت کہانیوں کی حقیقت کیا ہے؟
   اسی بارے میں
   

کیا سائنسدان کورونا وائرس کی ویکسین ایجاد کر پائیں گے؟

   

   عام طور پر کوئی ویکسین بنانے میں سالہا سال لگ جاتے ہیں، لیکن جدید ٹیکنالوجی پر کام کرنے والے ماہرین کہتے ہیں کہ اب یہ کام حیرت انگیز طور پر کم وقت میں کیا جا سکتا ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس: کیا دنیا چین کی طرح بیماری سے مقابلہ کر سکتی ہے؟

   

   چین نے سخت اقدامات کے ذریعے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روک دیا ہے لیکن کیا دوسرے ممالک بھی اتنی کامیابی سے یہ مشکل کام سرانجام دے سکتے ہیں؟
   اسی بارے میں
   

منشیات کے کارٹیل وبا کا کیسے فائدہ اٹھا رہے ہیں؟

   

   اس بحران میں کسی دوسرے کاروبار کی طرح لاطینی امریکہ میں موجود جرائم پیشہ گروہ بھی اپنے وجود کو خطرے میں دیکھ رہے ہیں کیونکہ وائرس کی وجہ سے بین الاقوامی سطح پر ان کی سپلائی لائنز متاثر ہوئی ہیں۔ لیکن اس کے باوجود ان کا کاروبار بند نہیں ہوا۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس اور آن لائن پھیلنے والی غلط معلومات

   

   کورونا وائرس کی وبا جتنی تیزی سے پھیلی اتنی ہی تیزی سے آن لائن اس کے پھیلاؤ سے متعلق غلط معلومات اور ویڈیوز بھی پھیلیں۔ بی بی سی نے یہ جاننے کی کوشش کی ہے کہ یہ سب معلومات آ کدھر سے رہی ہیں؟
   اسی بارے میں
   

کورونا: مشکل گھڑی میں انسانیت کے لیے پانچ حوصلہ افزا باتیں

   

   لاک ڈاؤن کی وجہ سے جہاں دنیا بھر میں آلودگی میں کمی کا رجحان دیکھا جا رہا ہے تو وہیں لوگوں نے عمر رسیدہ افراد کے گھروں پر اشیائے صرف پہنچانے کا بیڑہ بھی اٹھا لیا ہے۔
   اسی بارے میں
   

کووِڈ 19 کس طرح سفارتی تنازعات میں اضافہ کر رہا ہے

   

   کورونا وائرس کی وبا پھیلنے کے بعد کئی ممالک کے تعلقات خراب ہو رہے ہیں اور کئی کے پہلے سے خراب تعلقات میں مزید تنازعات جنم لے رہے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

یورپ کا واحد ملک جو کورونا وائرس سے پریشان نہیں

   

   بیلاروس کئی لحاظ سے ایک انوکھا ملک ہے۔ یہ یورپ کا واحد ملک ہے جہاں اب تک موت کی سزا کا قانون موجود ہے۔ یہ یورپ کا واحد ملک ہے جہاں حکام کو کورونا وائرس کی وبا کی کوئی پرواہ نہیں ہے۔.
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس: مختلف ممالک میں اموات کی شرح مختلف کیوں؟

   

   پہلے پہل یہ بات بہت حیران کن لگ رہی تھی کہ ایک وائرس جس میں کوئی تبدیلی بھی نہیں آئی اس کی وجہ سے مختلف ملکوں میں مرنے والوں کی تعداد میں اس قدر فرق ہو سکتا ہے۔ حتی کہ ایک ہی ملک میں بھی وقت کے ساتھ اموات کی تعداد بدل رہی ہے۔ ایسا کیوں ہے؟
   اسی بارے میں
   

کورونا: ترکمانستان میں اب تک کوئی کیس رپورٹ کیوں نہیں ہوا؟

   

   بہت سے ماہرین میں تشویش پائی جاتی ہے کہ ترکمانستان کی حکومت شاید حقیقت کو چھپا رہی ہے اور اس سے بیماری کو ختم کرنے کی کوششوں میں خلل پڑ سکتا ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس نے امریکہ کو کیسے بے نقاب کیا؟

   

   امریکہ کے محکمہ صحت کے سابق ڈائریکٹر ٹام فرائیڈن نے یہ پیشگوئی کی ہے کہ زیادہ خراب صورتحال میں، جو دکھائی دے رہی ہے، امریکہ کی آدھی آبادی کووڈ-19 وائرس کی لپیٹ میں آ سکتی ہے اور ایک ملین سے زیادہ افراد اس سے ہلاک ہو سکتے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس: پناہ گزین کیمپ کووڈ 19 کی وبا سے کیسے نمٹیں گے؟

   

   اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ 66 لاکھ افراد پناہ گزین کیموں میں یا انھی جیسے حالات میں زندگی گزار رہے ہیں۔ ان میں سے بیشتر کو خدشہ ہے کہ کیمپوں میں ہجوم اور صفائی کی ناقص صورتحال کے باعث ان کے کووڈ 19 سے متاثر ہونے کا امکان بہت زیادہ ہے۔
   اسی بارے میں
   

’انفلوئنسرز‘ کی چمک دمک سے بھرپور زندگی ماند کیوں پڑ رہی ہے؟

   

   کورونا وائرس کی وبا کا عالمی معیشت پر بہت گہرا اثر ہوا ہے اور یہ اثرات شاید بہت طویل مدتی ہوں۔ ان اثرات سے بچنے اور مارکیٹ میں اپنا وجود قائم رکھنے کی غرض سے بہت سے کاروباری ادارے سب سے پہلا کام یہ کر رہے ہیں کہ وہ اپنی ایڈورٹائزنگ اور مارکیٹنگ کے بجٹ میں تخفیف کر رہے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس سے کس طرح ٹھہر گیا ہے بالی وڈ

   

   ایک طرف اگر دنیا کورونا وائرس کی وجہ سے ٹھپ ہو کر رہ گئی ہے تو دوسری طرف بند سینیما گھروں اور گھر بیٹھے فلمی ستاروں کے ساتھ بالی وڈ بھی اپنے خالی پن سے جدوجہد کر رہا ہے۔
   اسی بارے میں
   

کورونا سے بچاؤ: لہسن کھائیں یا پانی پیتے رہیں کوئی فائدہ نہیں

   

   اسی بارے میں
   

کورونا کے علاج سے متعلق افواہوں کی حقیقت

   

   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس کا علاج اور اس سے جڑی افواہوں کی حقیقت کیا؟

   

   اسی بارے میں
   

کووڈ-19: کیا اس بات کا کوئی ثبوت ہے کہ وائرس لیبارٹری سے نکلا؟

   

   امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ امریکی حکومت اب ایسی غیر مصدقہ اطلاعات کا جائزہ لی رہی ہے کہ یہ وائرس چین کے شہر ووہان کی ایک لیبارٹری سے اخراج کے نتیجے میں دنیا میں پھیلا۔
   اسی بارے میں
   

بچوں کو کورونا وائرس کے بارے میں بتائیں، ڈرائیں نہیں

   

   والدین کس طرح بچے کو سمجھائیں کہ کورونا وائرس کیا ہے، یہ کتنا خطرناک ہے اور اس سے کیسے بچنا چاہیئے۔ بچے بچے ہوتے ہیں، چیزیں اپنی طرح سے سمجھتے ہیں۔
   اسی بارے میں
   

خنزیر کے گوشت کی فیکٹری: امریکہ میں کورونا کی وبا کا مرکز کیسے بنی؟

   

   امریکہ میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی اتنی بڑی تعداد ساؤتھ ڈکوٹا کے ایک چھوٹے سے کونے سے کیسے سامنے آئی؟ اس میں ایک پورک (خنزیر) پراسیسنگ فیکٹری کا کیا ہاتھ ہے؟ کہانی شروع ہوتی ہے ایک لڑکی کے اپنے جعلی فیسبک اکاؤنٹ پر لاگ-ان ہونے سے۔
   اسی بارے میں
   

انڈیا میں کورونا سے پہلی موت کی پراسرار کہانی

   

   76 سالہ محمد حسین صدیقی میں سعودی عرب سے لوٹنے پر کورونا وائرس کی علامات ظاہر ہونی شروع ہوئیں اور ان کے خاندان کے مطابق وہ انھیں ایک ہسپتال سے دوسرے ہسپتال لے جاتے رہے لیکن کسی نے ان پر توجہ نہیں دی۔
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس جنگلی حیات کے لیے کیسے فائدہ مند ہے؟

   

   سائنسدانوں کو شبہ ہے کہ چین کے صوبہ ووہان کے شہر ووہان کی ایک سی فوڈ یعنی سمندری غذاؤں کی مارکیٹ سے کورونا وائرس کی ابتدا ہوئی تھی، جس سے اب تک 213 جانیں جا چکی ہیں۔
   اسی بارے میں
   

یووال ہریری: کورونا وائرس صحت کا نہیں، سیاسی بحران ہے

   

   کووڈ 19 ہماری دنیا کو کیسے تبدیل کر گا؟ اس سوال کا جواب دیتے ہوئے مصنف اور تاریخ دان یوال نوحا ہریری کہتے ہیں کہ جن چیزوں کا انتخاب ہم آج کریں گے وہ آنے والے برسوں پر اثر انداز ہوں گی۔
   اسی بارے میں
   

کیا مصنوعی ذہانت سے کورونا وائرس کا علاج ڈھونڈنا ممکن ہے؟

   

   ایسا لگتا ہے جیسے کورونا وائرس کی عالمی وبا پر قابو پانے کے لیے کسی مافوق الفطرت مدد کی ضرورت ہے۔ تو کیا مشین لرننگ اس وبا کا علاج دریافت کرنے میں مددگار ہو سکتی ہے؟
   اسی بارے میں
   

کورونا وائرس: کیا وبا کی روک تھام کے لیے پرائیویسی قربان کرنا ہو گی؟

   

   ہماری زندگی کے کئی دوسرے حصوں کی طرح کورونا وائرس ہمیں ڈیٹا پرائیویسی کے حوالے سے بھی مجبور کر رہا ہے کہ ہم اپنی ترجیحات کے متعلق مشکل سوالات کا سامنا کریں۔
   اسی بارے میں
   

مشکل وقت میں خوش رہنے کے چند کارگر نسخے

   

   مشکل کی گھڑی میں بے چینی، مستقبل کی فکر اور پریشانی کا احساس ہونا کوئی حیرانی کی بات نہیں بلکہ ایک قدرتی عمل ہے۔ مگر چند نسخے ایسے ہیں جنھیں اپنا کر آپ مشکل وقت میں بھی خوش رہ سکتے ہیں۔
   اسی بارے میں

News Navigation

   (BUTTON) SectionsSections
     * صفحۂ اول
     * پاکستان
     * آس پاس
     * ورلڈورلڈ Selected
     * کھیل
     * فن فنکار
     * سائنس
     * ویڈیو
     * پنجابی ویڈیو

بی بی سی سائٹ پر صفحات

     * News
     * Sport
     * Weather
     * Radio
     * Arts

     * استعمال کے ضوابط
     * بی بی سی کے بارے میں
     * پرائیویسی پالیسی
     * Cookies
     * رسائی میں مدد
     * Parental Guidance
     * بی بی سی سے رابطہ کریں
     * Get Personalised Newsletters

   Copyright © 2020 بی بی سی. بی بی سی بیرونی سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے. بیرونی لنکس کے بارے میں ہماری پالیسی.